کلبھوشن یادیو کیس میں عالمی عدالت کا فیصلہ پاکستان کی فتح ہے: وزیرخارجہ

وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کا کہنا ہے کہ کلبھوشن کیس میں عالمی عدالت کا فیصلہ پاکستان کی فتح ہے.

تفصیلات کے مطابق عالمی عدالت کے فیصلے پر ردعمل دیتے ہوئے شاہ محمود قریشی نے کہا کہ کمانڈر یادیو پاکستان کے پاس ہی رہے گا.

انھوں نے کہا کہ کلبھوشن کے ساتھ برتاؤ پاکستانی قوانین کے مطابق ہوگا، یہ فیصلہ پاکستانی موقف کی جیت ہے.

خیال رہے کہ عالمی عدالت انصاف نے بھارتی جاسوس کلبھوشن یادیو کی بریت کی بھارتی درخواست مسترد کردی، ججز کے پینل نے پاکستان کے موقف کو درست قرار دے دیا۔ سزا ختم کرنے کی استدعا بھی مسترد کر دی گئی۔

کلبھوشن یادیو کیس کا فیصلہ عالمی عدالت کے جج عبدالقوی احمد یوسف سنایا، انھوں نے کہا کہ بھارت نے پاکستانی مطالبے پرکلبھوشن کااصل پاسپورٹ اور کلبھوشن کی شہریت کے دستاویزات نہیں دکھائے۔

عالمی عدالت نے کلبھوشن کا حسین مبارک پٹیل کے نام سے بھارتی پاسپورٹ اصلی قرار دے دیا، عالمی عدالت نے کہا کہ کلبھوشن یادیو اسی پاسپورٹ پر17 بار بھارت سے باہرگیااور واپس آیا۔

یاد رہے کہ بھارتی جاسوس کلبھوشن یادیو کو 3 مارچ 2016ء کو بلوچستان سے گرفتار کیا گیا، کلبھوشن نے دہشت گردی میں ملوث ہونے کا اعتراف کیا تھا، باضابطہ مقدمہ چلایا گیا، 2017ء میں فوجی عدالت نے سزائے موت سنائی تھی، بعد ازاں سزائے موت کے خلاف کلبھوشن یادیو نے رحم کی اپیل کی بھی تھی لیکن بھارت معاملے کو عالمی عدالت انصاف میں لے گیا تھا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں