اے این ایف نے رانا ثناء اللہ کے ساتھیوں کا کرمنل ریکارڈ طلب کرلیا

Spread the love

اینٹی نارکوٹکس فورس (اے این ایف) نے آر پی او کو مراسلہ لکھ دیا جس میں رانا ثناء اللہ کے ساتھیوں کا کرمنل ریکارڈ طلب کیا گیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق مسلم لیگ ن کے گرفتار رکن قومی اسمبلی رانا ثناءاللہ  کی مشکلات میں اضافہ ہوگیا ہے، اے این ایف نے آرپی او کو مراسلہ لکھ کر رانا ثنا کے ساتھیوں کا کرمنل ریکارڈ طلب کرلیا۔

ذرائع کے مطابق ان افراد کے منشیات اسمگلنگ میں ملوث ہونے کی تفصیل بھی مانگی گئی ہے، اے این ایف کی جانب سے سابق وزیر سمیت 10 افراد کا ریکارڈ مانگا گیا ہے۔

مراسلہ کے مطابق سابق صوبائی وزیر انسانی حقوق خلیل طاہر سندھو کا کرمنل ریکارڈ طلب کیا گیا ہے، اے این ایف کی فہرست میں 2 یوسی چیئرمین کا بھی ریکارڈ طلب کیا گیا ہے۔

اے این ایف کے مراسلے میں کہا گیا ہے کہ رانا ثناء اللہ سے تفتیش کے دوران ان افراد کے نام سامنے آئے تھے، ان افراد میں سابق یوسی چیئرمین ساجد جٹ، رانا مظفر، پرویز جٹ، رانا ارشد بھی شامل ہیں۔

اینٹی نارکوٹکس فورس کی جانب سے شمعون مسیح عرف صابی، رانا اظہر، عمران کے مجرمانہ کوائف طلب کیے گئے ہیں، رانا شریف اور شیخ عمران مانو کا کرمنل ریکارڈ بھی مانگا گیا ہے۔

واضح رہے کہ گزشتہ روز عدالت نے مسلم لیگ ن کے رہنما رانا ثناء اللہ کے جوڈیشل ریمانڈ میں 14 دن کی توسیع کرتے ہوئے جیل بھجوادیا تھا۔

یاد رہے یکم جولائی کو انسداد منشیات فورس نے رانا ثناء اللہ کو اسلام آباد سے لاہورجاتے ہوئےموٹر وے سے حراست میں لیا تھا ، راناثناءاللہ کی گاڑی سے بھاری مقدار میں ہیروئن برآمد ہوئی تھی ، جس کے بعد ترجمان اے این ایف نے گرفتاری کی تصدیق کردی تھی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں