شاہ رخ خان اور سنی دیول کے درمیان 16 سالہ ناراضگی

Spread the love

نئی دہلی : بھارتی اداکار سنی دیول نے بالی ووڈ کنگ شاہ رخ سے 16 سالہ ناراضی پر خاموشی توڑ دی۔

انڈین میڈیا کے مطابق سنی دیول نے انٹرویو میں شاہ رخ خان اور فلم ساز یش راج سے رنجشوں پر لب کشائی کرتے ہوئے کہا کہ 1993ء میں فلم ’ڈر‘ کی شوٹنگ جاری تھی جہاں ایک سین میں شاہ رخ خان کو مجھے چاقو مارنا تھا اس سین پر مجھے اعتراض تھا اور میں نے اپنا یہ اعتراض یش راج جی کے سامنے بھی رکھا اور انہیں بتایا کہ میں فلم میں کمانڈو آفیسر کا کردار ادا کر رہا ہوں جوکہ ایک انتہائی فٹ شخص ہوتا ہے تو پھر یہ کیسے ممکن ہوسکتا ہے کہ ایک عام شخص باآسانی کمانڈو پر وار کردے۔

بولی وڈ اداکار سنی دیول نے یہ بھی کہا کہ وہ شخص مجھے تب پیٹ سکتا ہے جب میں اسے دیکھ نہ پا رہا ہوں یا میری توجہ کہیں اور ہو اور میری تمام تر توجہ اس پر ہونے کے باوجود وہ پھر بھی مجھے چاقو سے وار کردے تو میں اپنے آپ کو کمانڈو کیسے کہوں؟

سنی دیول نے یہ بھی کہا کہ یش راج کو تمام صورتحال بتانے کے دوران میں بہت غصے میں تھا میں نے انہیں اور کچھ نہیں کہا کیوں کہ میں اُن کی عزت کرتا ہوں اُس دوران غصے میں ہونے کی وجہ سے میں نے اپنا ہاتھ جیب میں رکھا ہوا تھا شدید غصے میں ہونے کی وجہ سے مجھے اندازہ ہی نہیں ہوا کہ میرے ہاتھوں کی وجہ سے پینٹ کی جیب پھٹ گئی تھی۔

خیال رہے کہ 1993ء میں بننے والی مقبول ترین فلم ’ڈر‘ میں شاہ رخ خان کا کردار آج بھی اُن کے مداحوں کو یاد ہے۔ فلم میں شاہ رخ کے ساتھ سنی دیول اور جوہی چاولہ نے مرکزی کردار ادا کیا تھا

اپنا تبصرہ بھیجیں