اسلاموفوبیا سے نمٹنے کے لیے وزیراعظم کی او آئی سی رکن ممالک کے سفیروں سے بیٹھک

‏وزیر اعظم عمران خان سے او آئی سی کے رکن ممالک کے سفیروں کی ملاقات ہوئی جس میں ‏وزیر اعظم نے سفیروں کو اسلاموفوبیا سے نمٹنے کےلئے کوششوں سے آگاہ کیا

وزیر اعظم ہاوس کی جانب سے جاری اعلامیہ کے مطابق ‏وزیر اعظم نے مسلم عالمی رہنماؤں کو لکھے گئے 2 خطوط کا حوالہ بھی دیا

اس موقع پر وزیر اعظم عمران خان نے کہا کہ اسلاموفوبیا کے خلاف متحد ہوکر اس سے نمٹا جائے، ‏اسلامو فوبیا کے خلاف عالمی سطح پر آگاہی پھیلائی جائے،

وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ ‏اسلامو فوبیا کے خلاف مقصد افہمام و تفہیم اور بین المذاہب ہم آہنگی کا فروغ ہے،
‏اسلاموفوبیا مذاہب کے درمیان منافرت اور عدم استحکام کا باعث ہے،

وزیراعظم نے مزید کہا کہ ‏دنیا کو اسلاموفوبیا کے بڑھتے واقعات پر توجہ دینے کی ضرورت ہے ‏انتہا پسندی اوردہشتگردی کو اسلام کیساتھ جوڑنا مسلمانوں کیلئے بدنامی کاباعث ہے ،

وزیراعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ ‏مقدس ہستیوں کیخلاف اقدامات کوآزادی اظہار رائےکہناڈیڑھ ارب مسلمانوں کی دل آزاری ہے، ‏عالمی برادری کو حساسیت سے آگاہ کرنے کیلئے مشترکہ طور پر کام کرنا چاہیے،‏ہمیں دنیا کو بتانا چاہیے کہ ہمارے دلوں میں نبی کریم ﷺاورقرآن پاک کاکتنااحترام ہے،

وزیراعظم عمران خان نے زور دیا کہ ‏دنیا بھر کے مذاہب کے مقدسات کو قانونی تحفظ دینے کی ضرورت ہے، ‏اسلام کا حقیقی تشخص دنیاکو بتانے کیلئے او آئی سی کو مشترکہ کوشش کرنی چاہیے،
‏پاکستان تمام ممالک کیساتھ برداشت باہمی احترام پر مبنی تعلقات کیلئے پرعزم ہے،

اپنا تبصرہ بھیجیں