انڈیا میں آکسیجن کی قلت, مہاشٹرا کی مسجد سے گیس کی مُفت فراہمی

انڈیا کی ریاست مہاراشٹر میں واقع مسجد کی جانب سے بغیر کسی تفریق کے مریضوں کو مفت آکسیجن دی جا رہی ہے
ممبئی کی پھول گلی مسجد کے ذریعے ایسے مریضوں کو آکسیجن سلینڈر دے کر ان کی مدد کی جا رہی ہے جب انہیں اس کی سخت ضرورت ہے۔

پورا انڈیا اس وقت بُری طرح کورونا وباء کی زد میں ہے۔ ہر جانب کورونا وائرس نے اپنا قہر برپا کر رکھا ہے ایسے میں حالات تشویشناک بنے ہوئے ہیں۔ ایسی صورتحال میں ممبئی سمیت مہاراشٹر بھر میں بڑھتی ہوئی کورونا مریضوں کی تعداد نے حکومت کو تشویش میں مبتلا کردیا ہے۔ مریضوں کی تعداد کے سبب سہولیات کا شدید فقدان ہے۔ جس کی وجہ سے آکسیجن کی شدید کمی پیداہو گئی ہے۔

آکسیجن وقت پر نہ ملنے سے کئی مریضوں نے اسپتال میں ہء دم توڑ دیا ہے
کورونا کی دوسری لہر پہلے سے زیادہ خطرناک ہے جس نےممبئی کو بے حد متاثر کیا ہے۔ ویکسین سے لے کر آکسیجن تک کی بھی کمی ہوگئی ہے ، ایسے حالات میں اگر کسی ضرورت مندکو وقت پر آکسیجن مفت مل جائے تو سوچئے یہ کسی کرشمہ اور نعمت سے کم نہیں ہوگا۔

ممبئی کی پھول گلی مسجد کے ذریعے ایسے مریضوں کو آکسیجن سلینڈر دے کر ان کی مدد کی جا رہی ہے جب انہیں اس کی سخت ضرورت ہے۔

اس آکسیجن کے لئے کوئی قیمت ادا نہیں کرنی پڑتی، بس اس کے لئے آپ کو مریض کی ڈیٹیل اور ڈاکٹر کے ذریعے لکھے گئے پرچےکو دکھانا پڑے گا جس کے بعد آپ کو سلینڈر مل جائے گا۔

سرفراز منصوری نے بتایا کہ مسجد سے تمام مذاہب اور ذات کے لوگوں کو آکسیجن فراہم کیاجارہی ہے۔ پچھلے سال جب کورونا کا قہر برپا ہوا تھا اور لوگوں کو آکسیجن نہیں مل پا رہی تھی اسی وقت اس سہولت کی شروعات کی گئی تھی تا کہ جن مریضوں کو اسپتال میں جگہ نہیں مل رہی ہے اور انہیں آکسیجن کی ضرورت ہے تو پہلے انھیں آکسیجن مل جائے تاکہ انہیں راحت مل سکے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں