لبیک 22 کروڑ عوام کا نعرہ, تعلق اسلام سے ہے اسلام آباد سے نہیں, وزیر داخلہ شیخ رشید

اسلام آباد میں وفاقی وزیر داخلہ شیخ رشید احمد نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ 20اپریل کو 7گھنٹے کے مذاکرات کے بعد ٹی ایل پی سے معاملات طے پاگئے ہیں 19کو طے پایا کے قرارداد اسمبلی میں 20 کو پیش کی جائے گی

شیخ رشید احمد نے کہا کہ 22کروڑ لوگ لبیک کا نعرہ لگاتے ہیں یہ اسلام کا نعرہ ہے اسلام آباد کا نہیں

انہوں نے مزید کہا کہ سات سو لوگوں میں سے 669 افراد کو رہا کردیا گیا ہے پنجاب کے 210 مقدمات قانونی عمل سے گزریں گے اس میں سعد رضوی کا مقدمہ بھی شامل ہے ٹی ایل پی کاالعدم قرار دینے کے فیصلے کے کیخلاف تیس دن میں اپیل کرسکتی ہے
وزیر داخلہ نے کہا کہ وزیر اعظم ناموس رسالت کا مشترکہ لائحہ عمل بنانے کے لیے اسلامی ممالک کے سربراہان سے ملاقات کریں گے

سابق وزیر اعظم نواز شریف سے متعلق سوال پر شیخ رشید نے کہا کہ برٹش ہائی کمشنر سے کہا ہے کہ نواز شریف کو ڈی پورٹ کریں برٹش کمشنر سے ریڈ لسٹ میں شامل کرنے سے متعلق بھی بات کی ہے

انہوں نے کہا کہ شائد خاقان عباسی کو لگتا ہی نہیں کہ وہ اب وزیر اعظم نہیں رہے, میری سیاسی زندگی کے سب سے ناذیبا الفاظ دیکھے

انہوں نے کہا کہ محرم، عید میلاد النبی سمیت تمام ایونٹ پر مسائل پیدا ہوتے ہیں کوشش کریں گے کوئی ایک پالیسی لائیں کوشش بہت کی آپریشن نہ ہو سات سات گھنٹے مذاکرات کیے اب ایسی باتیں مناسب نہیں
شہید پولیس اہلکاروں کے لواحقین کو 4کروڑ روپے دیں گے
سوشل میڈیا کے ذریعے پاکستان کے استحکام کو تباہ کرنے کی کوشش کی گئی پولیس اور رینجرز نے زبردست کام کیا

شیخ رشید نے مزید کہا کہ جس ملک میں ختم نبوت کا سپاہی وزیر داخلہ وہاں ناموس رسالت کو کوئی خطرہ نہیں, سوشل میڈیا نے جو کردار ادا کیا اس پر اسٹڈی جاری یے سخت قانون بنائیں گے, انڈیا سے دو لاکھ لوگ سوشل میڈیا پر آن لائن تھے دشمن چاہتا ہے ہم گرے سے بلیک لسٹ میں چلے جائیں
وزیر اعظم نے کہا ہے مذہب فروشوں کو نہیں چھوڑیں گے
سراج الحق نے ذمہ داری کے ساتھ مجھے فون کیا مذاکرات کا مشورہ دیا
فضل الرحمن سمجھا اس کی لاٹری نکل آئی
مولانا نے رات گیارہ بجے پریس کانفرنس کی لاشیں اسلام آباد لانا, میں بھی آؤں گا
فضل الرحمنٰ اسلام آباد میں کچھ اور دیکھنا چاہتے تھے عمران خان پانچ سال پورے کریں گے

اپنا تبصرہ بھیجیں