بی جے پی کے غنڈوں کو حریت پسندوں نے ہلاک کیا: بھارتی پولیس

جموں و کشمیر: آئی جی پولیس نے دعویٰ کیا ہے کہ کولگام میں 3 بی جے پی غنڈوں کی ہلاکت میں مسلح عسکریت پسند جماعت ٹی آر ایف کے اعلیٰ عسکریت پسند ملوث ہیں۔

پولیس کی طرف سے جموں کے ضلع سمبا سے ٹی آر ایف کے ایک اعلیٰ عسکریت پسند مجاھد کو گرفتار کرنے کا دعویٰ بھی کیا ہے۔

پولیس نے دعویٰ کیا ہے کہ وہ کشمیر کے ضلع کولگام میں بی جے پی کارکنوں اور ایک پولیس اہلکار کی ہلاکت میں مبینہ طور پر ملوث تھا۔

انسپکٹر جنرل پولیس کشمیر زون وجے کمار کے اننت ناگ سے پولیس کی ایک ٹیم نے 12 اور 13 فروری کی درمیانی شب کو سامبا سے عسکریت پسند ، ظہور احمد عرف ساحل عرف خالد کو گرفتار کیا ہے جو کہ گزشتہ سال کو لگام میں بی جے پی کے تین گنڈوں اور جنوبی کشمیر کے ضلع فوڑہ میں ایک پولیس اہلکار کے قتل میں ملوث تھا اور پولیس کے لئے دہشت کا باعث تھا۔

کشمیر کے ایک اعلی پولیس افسر نے مزید کہا کہ ظہور کو تفتیش کے لئے کشمیر لایا جارہا ہے اسی لئے پوری مقبوضہ وادی کشمیر کی سیکیورٹی انتہائی سخت کر دی گئی ہے کیونکہ گمان ہے کہ مجاھدین ظہور کو چھڑوانے کی کوشش کرینگے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں