مقبوضہ کشمیر: لاپتہ نوجوان کی پراسرار موت کے خلاف مظاہرے

بھارت کے غیر قانونی زیر قبضہ جموںوکشمیر کے قصبے راجوری میں ایک لاپتہ نوجوان کی پراسرارموت کے خلاف متوفی کے اہلخانہ اور رشتہ داروں نے احتجاجی مظاہرہ کیا ہے۔

رپورٹ کے مطابق مقامی لوگوں نے راجوری قصبے میں احتجاجی مظاہرہ کیا۔۔

ظہور کی لاش گمشدگی کے تین روز بعد قصبے کے بس سٹینڈ کے قریب جھاڑیوں سے برآمد ہوئی ہے۔

متوفی کے اہلخانہ اور رشتہ داروں نے ذرائع ابلاغ کے نمائندوں کو بتایا کہ ان کے پیارے کو قتل کر دیا گیا ہے جبکہ پویس نے اسکی تلاش میں تین روز لگا دیے۔

انہوں نے قابض انتظامیہ کے خلاف شدید نعرے بازی کی۔

ادھرضلع کشتواڑ کے علاقے چریانہ ڈرابشللہ میں ایک آٹھ سالہ لڑکا روی کمار اپنے والد کی بندوق سے حادثاتی طور پر نکلنے والی گولی لگنے سے ہلاک ہو گیا۔

ہلاک ہونے والے لڑکے کا والد بھارتی فوج کی سرپرستی میں قائم دیہی دفاعی کمیٹی کا رکن ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں