افغانستان سے غیر ملکی افواج کا سامان لے جانے والے ٹرکوں پر حملہ

خیبر پختونخوا کے دارالحکومت پشاور سے ملحقہ قبائلی ضلع خیبر میں نامعلوم افراد نے افغانستان سے غیر ملکی افواج کا سامان لے جانے والے ٹرکوں پر حملہ کیا ہے۔

ضلع خیبر کے علاقے باڑہ میں نیٹو کے واپس جانے والے دو ٹرالرز پر لوڈ چار جیپوں کو راکٹوں سے نشانہ بنایا گیا، جس کے نتیجے میں چاروں جیپیں مکمل طور پر تباہ ہو گئیں۔ جب کہ ایک ٹرالر سڑک سے نیچے اتر گیا اور اس میں آگ لگ گئی۔ حملے میں دوسرے ٹرالر کو بھی نقصان پہنچا۔

راکٹ حملے اور آگ لگنے کی اطلاع ملتے ہی ضلع خیبر میں حادثات اور قدرتی آفات سے نمٹںے کے ادارے ریسکیو 1122 کے اہل کار موقع پر پہنچے اور گاڑیوں میں لگی آگ بجھانے کی کوشش کی۔

حکام کا کہنا ہے کہ حملے میں نشانہ ٹرالرز پر موجود نیٹو کی گاڑیاں تھیں۔ یہ گاڑیاں دو ٹرالرز پر لے جائی جا رہی تھیں جن کے ڈرائیوروں نے بھاگ کر اپنے آپ کو بچایا۔

نیٹو کا سامان لے جانے والے ٹرکوں پر حملوں کے حوالے سے تاحال ​کسی گروہ نے ذمہ داری قبول نہیں کی۔

سید اختر علی شاہ نے کہا کہ دہشت گردی کے واقعات میں اضافے کے باعث اندیشہ ہے کہ مستقبل قریب میں ایسے مزید واقعات ہو سکتے ہیں۔

خیال رہے کہ ​کئی برس کے بعد پشاور سے ملحقہ قبائلی ضلع خیبر میں سرحد پار افغانستان میں تعینات نیٹو افواج کا سامان کے جانے والے ٹرکوں پر حملہ کیا گیا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں