عدالت نے کالعدم تنظیم کے 2 دہشت گردوں کو 15 سال قید کی سزا سنادی

انسداد دہشت گردی کی عدالت نے کالعدم تنظیم کے 2کارندوں کے خلاف فنڈنگ کا جرم ثابت ہونے پر مجموعی طور پر ساڑھے 15 سال قید اور 80 ہزار جرمانے کی سزا سنادی۔

تفصیلات کے مطابق کراچی کی انسداد دہشت گردی کی عدالت میں سرجانی ٹاؤن میں کالعدم تنظیم کے زمین پرقبضے اور فنڈنگ کیس کی سماعت ہوئی۔

عدالت نے کالعدم تنظیم کے 2کارندوں کے خلاف فنڈنگ کا جرم ثابت ہونے پر محمدبن شہزاد اورریحان کو مجموعی طور پر ساڑھے 15 سال قید اور 80 ہزار جرمانے کی سزا سنادی، جرمانہ ادا نہ کرنے پر مجرمان کو مزید 14 ماہ قید بھگتنا ہوگی۔

عدالت نے استغاثہ کے گواہان میں کالعدم تنظیم کے رکن کو شامل کرنے پر انکوائری کا حکم دیتے ہوئے کہا تفتیشی افسر نے رکن کو بطور استغاثہ گواہ پیش کرکےمقدمہ کمزورکرنے کی کوشش کی، ایڈیشنل آئی جی سی ٹی ڈی کو 30 دن میں انکوائری اور تفتیشی افسر کے خلاف کارروائی کریں۔

عدالت نے سوال کیا کہ زمین واگزار کرکے دوبارہ کالعدم تنظیم کے ارکان کے حوالے کردی گئی؟ اور چیف سیکریٹری کو معاملے کا ازسرنو جائزہ لینے کا حکم دیتے ہوئے کہا تجاوزات کو بجلی اورگیس کنکشن نہیں دیے جانے چاہییں۔

عدالت کا کہنا تھا کہ غیر قانونی تجاوزات کےباعث بجلی اورگیس کی لوڈ شیڈنگ کاسامنارہتاہے، تجاوزات کو بجلی اور گیس کنکشن عملے کی ملی بھگت کےبغیر ممکن نہیں۔

انسداد دہشت گردی کی عدالت نے غیر قانونی اقدامات روکنے کے لیے فیصلے کی کاپی نیپرا اوراوگرا حکام کو بھیجنے کا بھی حکم دیا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں