سعودی عرب نے چین میں اہم منصوبہ منسوخ کردیا

سعودی عرب کی سرکاری آئل کمپنی ارامکو نے چین میں 10 ارب ڈالر کی مالیت سے پیٹرو کیمیکل کمپلیکس بنانے کا منصوبہ منسوخ کردیا۔

کاروباری جریدے بلومبرگ نے ذرائع کے حوالے سے دعویٰ کیا ہے کہ ارامکو نے چین میں سرمایہ کاری نہ کرنے کا فیصلہ تیل کی کم ہوتی قیمتوں کی وجہ سے کیا ہے، کمپنی یہ پیسے خسارہ پورا کرنے میں صرف کرے گی۔

ارامکو نے چین کے شمال مشرقی صوبے لیاؤ ننگ میں چینی آئل کمپنی کے ساتھ مل کر یہ منصوبہ شروع کرنا تھا ۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ مارکیٹ میں غیر یقینی صورتحال اس فیصلے کی وجہ بنی ہے۔

خیال رہے کہ گزشتہ برس فروری میں سعودی عرب کے ولی عہد محمد بن سلمان کے دورہ چین کے دوران آئل کمپلیکس کے جوائنٹ وینچر کے معاہدے پر دستخط ہوئے تھے۔ ارامکو نے یہ ریفائنری نورنکو اور پینجن سنسن کے ساتھ مل کر لگانی تھی جس کا نام ہوجیان ارامکو پیٹرو کیمیکل کارپوریشن رکھا جانا تھا ، سعودی عرب نے اپنا 70 فیصد خام تیل یعنی 3 لاکھ بیرل روزانہ اس ریفائنری کو فراہم کرنا تھا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں