بیروت میں ہونے والے دھماکوں کی تحقیقات میں اہم پیشرفت

لبنان کے دارالحکومت بیروت میں ہونے والے دھماکوں کی تحقیقات کرنے والے جج نے اعلیٰ افسر سمیت 2 افراد کے وارنٹ گرفتاری جاری کر دیے۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق جج فادی ساون نے دھماکوں کی تحقیقات کے سلسلے میں دو افراد کے وارنٹ گرفتاری جاری کر دیے۔

لبنان کی سرکاری نیوز ایجنسی این این اے نے کسٹم اتھارٹی کے ڈائریکٹر ہنا فارس اور جس گودام میں دھماکے ہوئے اس کے ایک کنٹریکٹر نائلہ الحاج کے وارنٹ جاری کرنے کی تصدیق کی ہے۔

دھماکوں کے سلسلے میں تحقیقات کا سامنا کرنے والے 25 افراد میں سے 6 افراد کے وارنٹ گرفتاری جاری کر دیے گئے ہیں، ان میں بیروت پورٹ کے ڈائریکٹر جنرل حسن کورائیتم اور کسٹم کے ڈائریکٹر جنرل بدری شامل ہیں۔

حکومت کی جانب سے کی جانے والی تحقیقات میں غیر ملکی ماہرین معاونت کر رہے ہیں جن میں امریکی ایف بی آئی کے اہلکار بھی شامل ہیں۔

فرانس کی جانب سے بھی دھماکوں کی الگ تحقیقات کی جا رہی ہے، فرانس کے کئی شہری ان دھماکوں میں مارے گئے تھے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں