جب تک جموں کشمیر مرکزکے زیرانتظام علاقہ رہےگا تب تک الیکشن نہیں لڑوں گا: عمر عبد اللہ

نیشنل کانفرنس کے نائب صدر اور جموں کشمیر کے سابق وزیر اعلیٰ عمر عبد اللہ نے کہا ہے کہ وہ تب تک انتخابات میں شامل نہیں ہونگے جب تک جموں کشمیر مرکز کے زیر انتظام علاقہ رہے گا۔

انہوں نے جموں کشمیر کو مرکز کے زیر انتظام دوعلاقوں میں تقسیم کئے جانے کو تذلیل آمیز قرار دیا۔عمر نے گذشتہ برس ماہ اگست کے کم و بیش ایک سال بعد خاموشی توڑتے ہوئے مرکز کے فیصلوں پر اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے انڈین ایکسپریس اخبار میں ایک مضمون شائع کیا۔انہوں نے لکھا”میں واضح کرتا ہوں کہ جب تک جموں کشمیر ایک یو ٹی ہے تب تک اسمبلی الیکشن نہیں لڑوں گا۔

عمر عبد اللہ نے کہا کہ میں سب سے با اختیار اسمبلی کا ممبر رہا ہوں، اور وہ بھی اسمبلی لیڈر کے طور مکمل چھ سال تک۔میں اب ایک ایسی اسمبلی کا ممبر نہیں بنوں گا جس کو بے اختیار کیا گیا ہے۔“عمر عبد اللہ کا کہنا تھا کہ اُن کی پارٹی دفعہ370کی منسوخی اور جموں کشمیر کو تقسیم کرنے کیخلاف لگاتار جد و جہد کرتی رہے گا۔

انہوں نے کہا”نیشنل کانفرنس جموں کشمیر کے ساتھ کئے گئے سلوک کو قبول نہیں کرتی ہے ۔ہم اس کی مخالفت کرتے رہیں گے اور اس کیلئے ہم نے ملک کی اعلیٰ ترین عدالت کا دروازہ کھٹکھٹایا ہے“۔

اپنا تبصرہ بھیجیں