انڈیا میں دو یونیورسٹی طالبات گرفتار: شہریت بل پر احتجاج جاری

انڈیا میں شہریت ترمیمی قانون کیخلاف احتجاج کرنے والی جواہر لال نہرو یونیورسٹی کی 2 طالبات کوانڈین پولیس نے گرفتار کرلیا۔

دیوانگنا اور نتاشا نامی طالبات نے فروری میں جعفرآباد میں دیئے گئے سی اے اے مخالف دھرنے میں شرکت کی تھی، دونوں کیخلاف درج ایف آئی آر میں سرکاری افسر کے کاموں میں رکاوٹ ڈالنے کی دفعات شامل کی گئی ہیں۔

اساتذ ہ یونین نے الزام لگایا ہےکہ دہلی پولیس مشرقی دہلی میں بھڑکے فسادات کو روکنے میں نہ صرف ناکام رہی بلکہ وہ تماشائی بھی بنی رہی اور اس نے الٹے ان طالبات کو جھوٹے الزام میں گرفتار کر لیا ہے۔

طالبات کا تعلق ’پنجرا توڑ‘ تنظیم سے ہے، جو کہ کالج کی طالبات کے حقوق کیلئے آواز اٹھاتی ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں