دنیا بھر میں ایک دن میں کرونا وائرس سے ایک لاکھ سے زائد افراد متاثر

بین الاقوامی ادارۂ صحت (ڈبلیو ایچ او) نے کرونا وائرس کے پھیلاؤ میں تیزی کی نشان دہی کرتے ہوئے دنیا میں ایک دن میں سب سے زیادہ افراد کے متاثر ہونے کی تصدیق کی ہے۔

بین الاقوامی ادارۂ صحت نے بدھ کو ایک بیان میں بتایا کہ وائرس کے ایک دن میں ایک لاکھ چھ ہزار سے زائد کیس رپورٹ ہوئے ہیں۔

چین میں دسمبر 2019 میں کرونا وائرس سامنے آنے کے بعد سے ایک دن میں وبا سے متاثر ہونے والے افراد کی یہ سب سے زیادہ تعداد ہے۔

ڈبلیو ایچ او کے سربراہ ٹیڈروس ایڈہینم گیبریاسس کا کہنا ہے کہ وہ کم اور متوسط آمدن والے ممالک کے لیے بہت زیادہ فکر مند ہیں۔

حالیہ چند ہفتوں کے دوران لاطینی امریکہ کے ممالک میں کرونا وائرس تیزی سے پھیلا ہے جہاں اب وائرس کے مریضوں اور ہلاکتوں میں مسلسل اضافہ ہو رہا ہے۔

خطے کے بعض ممالک نے لاک ڈاؤن سے متعلق پابندیاں نرم کر دی تھیں تاہم کیسز میں اضافے کے بعد کئی مقامات پر دوبارہ بندشیں لاگو کردی گئی ہیں۔

کرونا وائرس سے لاطینی امریکہ کا سب سے بڑا ملک برازیل بری طرح متاثر ہوا ہے اور کیسز کی تعداد کے اعتبار سے دنیا میں تیسرے نمبر پر آ چکا ہے۔ حکام نے دو لاکھ 90 ہزار سے زائد افراد میں وائرس کی تصدیق کی ہے۔ اسی طرح پرو، میکسیکو اور چلی میں بھی کیسز میں اضافہ ہو رہا ہے۔

صحت کے حکام نے برازیل میں ایک دن میں 1179 افراد کی ہلاکت کی تصدیق کی ہے۔

واضح رہے کہ برازیل کے صدر جیئر بولسنارو انتہائی تلخ انداز میں لاک ڈاؤن کی مخالفت کر تے آئے ہیں اور ان کا موقف رہا ہے کہ ‘معمولی فلو’ میں لاک ڈاؤن غیر ضروری ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں