حزب کمانڈر جنید صحرائی ساتھی سمیت شہید،

سری نگر: جموں و کشمیر پر قابض بھارتی فوج کے ایک حملے میں حزب کمانڈر جنید صحرائی ساتھی سمیت شہید ہو گئے، جس پر کشمیری سراپا احتجاج بن گئے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق مقبوضہ کشمیر میں بھارت کے غاصبانہ قبضے کے خلاف کشمیری جوان برسر پیکار ہیں، قابض بھارتی فوج نے سرینگر کے علاقے نواکادل میں گزشتہ روز حملہ کیا۔

بھارتی فوج کے حملے میں حریت رہنما اشرف صحرائی کے بیٹے اور حزب کمانڈر جنید صحرائی ساتھی سمیت شہید ہو گئے ہیں، بھارتی فوج کے حملے میں 17 مکانات بھی تباہ ہو گئے، جس کے بعد علاقہ میدان جنگ بن گیا۔

بڑی تعداد میں کشمیری عوام سڑکوں پر نکل آئے ہیں، کئی مقامات پر بھارتی فورسز کے ساتھ جھڑپیں جاری ہیں، جس میں متعدد کشمیری زخمی ہوئے۔

خیال رہے کہ بھارت کی جانب سے کشمیریوں کو بربریت کا مسلسل نشانہ بنایا جا رہا ہے، چند دن قبل بڈگام میں بھی پیر معراج الدین کی شہادت بھارتی مظالم کی تازہ مثال ہے، بھارتی پولیس پرامن مظاہرین پر طاقت کا بے جا استعمال کر رہی ہے، اور پرامن مظاہرین پر شاٹ گن، پیلٹ گن اور آنسو گیس استعمال کی جا رہی ہے۔

اتوار کو بھی ضلع ڈوڈا میں 2 کشمیری شہید کر دیے گئے تھے، کشمیری میڈیا کے مطابق نوجوانوں کو نام نہاد سرچ آپریشن کے دوران نشانہ بنایا گیا تھا، اس آپریشن کے دوران ایک بھارتی فوجی بھی مارا گیا۔ دو دن قبل پلواما اور شوپیاں میں بھی بھارتی فورسز نے نام نہاد سرچ آپریشن میں علاقے کا محاصرہ کر کے متعدد نوجوانوں کو گرفتار کر لیا تھا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں