کاوسہ نارہ بل میں فورسز کی فائرنگ 1 نوجوان شہید

سرینگر: گلمرگ شاہراہ پر کاوسہ ناربل میں ریلوے پل کے نزدیک بدھ کی صبح سی پی ایف اہلکار وں نے وہاں سے گزر رہی ایک نجی گاڑی پر فائرنگ کی جس کے نتیجے میں گاڑی میں سوارایک نوجوان جاںبحق ہو گیا۔

نوجوان کی ہلاکت کیخلاف اسکے آبائی گائوں مکہامہ بیروہ میں لوگ مشتعل ہوئے جس کے بعد مظاہرین اور فورسز کے درمیان شدید جھڑپیں ہوئیں۔

امن و امان کی صورتحال برقرار رکھنے کیلئے ضلع میں موبائل انٹر نیٹ خدمات معطل کر دی گئیں۔

پولیس نے واقعہ کے حوالے سے کیس درج کر لیا ہے۔پولیس کا کہنا ہے کہ مذکورہ نوجوان کو فورسز نے ایک ناکے پر رکنے کا اشارہ کیا، جو شاہراہ پر مخالف سمت سے گاڑی چلا رہا تھا، جس کے بعد اس پر فائر کیا اور گولی اسکے کندھے پر جالگی اور وہ صدر اسپتال میں دم توڑ بیٹھا۔

واقعہ کیسے ہوا؟

مقامی لوگوں کے مطابق صبح قریب ساڑھے دس بجے گلمرگ روڑ پر ریلوے پل کے نزدیک کاوسہ کراسنگ پر ایک نوجوان اپنی گاڑی زیر نمبر JK02AK-6702میں کہیں جا رہا تھا ، لیکن وہ اپنی گاڑی سہی سمت میں نہیں بلکہ مخالف سمت میں چلا رہا تھا۔

لوگوں نے بتایا کہ کراسنگ پر مذکورہ نوجوان کی گاڑی پر فائرنگ کی گئی، لیکن اس وقت گاڑی رکی ہوئی تھی۔

انہوں نے کہا کہ گاڑی میں ایک اور شخص بھی سوار تھا ۔

انکا کہنا ہے کہ خون میں لت پت نوجوان وہی گر پڑا جس کے بعد اسکو اسپتال لے جایا گیا، نوجوان  بعد میں اسپتال میں دم توڑ بیٹھا جس کی شناخت بعد میں معراج الدین شاہ ساکن مکہامہ، بیروہ بڈگام کے بطور ہوئی، معلوم ہوا  ہے کہ مذکورہ نوجوان کی گاڑی میں اسکا پولیس میں کام کررہا اسسٹنٹ سب انسپکٹر چاچا غلام حسن بھی سوار تھا۔

نوجوان کا بڑا بھائی شبیر احمد بھی پولیس میں کام کررہا ہے اور والد محکمہ بجلی کا سابق ملازم ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں